Top ads

گردن کی میل اور سیاہی ختم کرنے کا طریقہ

گردن کی سیاہی اور میل ختم کرنے  کے لاجواب ٹوٹکے

گردن کی میل اور سیاہی ختم کرنے کا طریقہ


چہرے کی خوبصورتی کے ساتھ ساتھ گردنکی خوبصورتی کا خیال رکھنا بھی بے حد ضروری ہے۔لیکن بیشتر خواتین اور مرد گردن کی جِلد اور ساخت پر توجہ دینے کی بالکل ضرورت محسوس نہیں کرتے۔  اگر گردن کی روزانہ صفائی نہ کی جائے تو اس پر میل جمنے لگتا ہے، جو گردن پرسیاہی کی صورت اختیار کرلیتا ہے۔اسی لیے گردن کی خوبصورتی کے لیے اس کی صفائی بہت زیادہ ضروری ہے اور یہ روزانہ کی بنیادوں پر کی جانی چاہئے۔

گردن کی صفائی کے کئی ایک طریقے ہیں جو کہ نہايت آسان ہیں ان طریقوں میں سے چند ایک طریقے ہم یہاں ذکر کریں گے۔

1.      خواتین گرد ن کی سیاہی دور کرنے کیلئے ایک کھانے کا چمچ زیتون کا تیل، دو کھانے کے چمچ نمک اور ایک کھانے کا چمچ بیکنگ سوڈا لیں۔ان سب اشیاء کا مرکب بنا لیں پھر گردن پر لگا کر چند منٹ تک مالش کریں پھر پندرہ منٹ تک یہ پیسٹ لگا رہنے دیں اور نیم گرم پانی سے گردن دھو لیں یہ عمل ایک ہفتہ لگاتار کریں۔ گردن چمک اٹھے گی۔

2.     گردن کی صفائی کےلیے گلیسرین، پانی اور لیموں کے چند قطرےلے کر اچھی طرح سے مکس کریں، تینوں اجزاء لوشن کی صورت یکجان ہوجائیں تو رات کو سونے سے پہلے اسے گردن پر لگائیں اور صبح اٹھ کر دھولیں۔ یہ عمل چند دن کیلئے روز دہرائیں۔

صحت کیلئے فکرمندہیں؟ پڑھئیے صحت بہتر کرنے کے تین آسان طریقے

3.    غسل کرنےسے پہلے زیتون کے تیل سےگردن کا ہلکا مساج کریں، مساج کرتے وقت انگلیوں کو نیچے سے اوپر کی طرف حرکت دیں اور گردن کو ضرورت سے زیادہ نہ دبائیں۔

4.    ایک لیموں کا چھلکا تقریباً آدھا کپ پانی میں ابال کر ٹھنڈا کر لیں پھر اس پانی میں چار کھانے کے چمچ جو کا آٹا اور آدھا چائے کا چمچ ہلدی ملا کر پیسٹ بنا لیں یہ پیسٹ گردن پر لگائیں اوردس منٹ تک مساج کریں اور پانی سے دھونے کے بعد کسی اچھی کریم میں تین قطرے عرق گلاب ملا کر لگا لیں یہ عمل ایک ہفتہ پابندی سے روزانہ کرنے سے گردن کی سیاہی بالکل دور ہو جائے گی۔

5.    کچا دودھ، تازہ لیموں کا رَس اور تھوڑا سا آٹا باہم ملالیں، اس آمیزے کو گردن پر لگائیں۔ دس سے پندرہ منٹ کے بعد نیم گرم پانی سے صاف کرلیں۔ اس آمیزے میں معمولی مقدار ہلدی بھی استعمال کی جاسکتی ہے۔

6.     دہی اور بیسن کو ملاکر بھی گردن پر لیپ کیا جاسکتا ہے۔ اس سے گردن کی صفائی بہترین ہوتی ہے۔

مزید بیوٹی ٹپس اور ٹوٹکے پڑھنے کیلئے یہاں کلک کریں


ایک تبصرہ شائع کریں

0 تبصرے

close